GW TV

Gujranwala Based News

سیاست

یہ الیکشن نہیں بلکہ کرپشن کے حامیوں اور کرپشن مخالفین کے درمیان ایک جنگ ہے۔ ڈاکٹر فردوس عاشق اعوان

گوجرانوالہ(حافظ عبدالرحمٰن منہاس سے)معاون خصوصی وزیر اعلیٰ پنجاب برائے اطلاعات ڈاکٹر فردوس عاشق اعوان نے کہا کہ چوروں کی رانی اپنی کارستانیوں کی وجہ سے اپنی جی ٹی روڈ کی پارٹی کو آج ڈسکہ کی ایگ گلی تک محدود کر دیا، سنٹرل پنجاب جیت کر پورے پنجاب کے قابض ہونے کے سیاسی قلع کے دعوے دار نے صبح سے لے کر رات تک، لاہور سے لے کر ڈسکہ کی ایک گلی میں اختتام پذیر ہوا۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے ڈسکہ میں منعقدہ ایک پُرہجوم میڈیا کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ ڈاکٹر فردوس عاشق اعوان نے کہاکہ سیاسی یتیموں نے جگہ جگہ ٹھوکریں کھانے کے بعد ڈسکہ میں سیالکوٹی ٹھگ کے ساتھ اظہار یکجہتی کیا۔انہوں نے کہاکہ اپوزیشن کی آہیں اور سسکیاں اس بات کی عکاسی کرتی ہیں کہ یہ نہ صرف موروثی سیاست میں حصہ دار ہیں بلکہ کرپشن میں بھی شراکت داری ہے۔انہوں نے مریم نواز کو آڑھے ہاتھوں لیتے ہوئے کہاکہ ©©”ٹھگاں کے ٹھگ پروہنے ہوندے نیں۔انہوں نے کہاکہ مریم نے وارث شاہ کا نام لے کرجو شعر پڑھے اس سے وارث شاہ کی بھی روح کانپ اٹھی ہوگی یہ شعر امریتاپریتم نے کہے تھے۔ وارث شاہ نے ان کے لیے کہا تھا۔ جھوٹ کا سودا ہتھوں ہتھوں ۔سچ داگاہک ٹاواں ٹاواں۔انہوں نے کہاکہ جھوٹ بولنے والے مداریوں نے نسل در نسل جھوٹ کی سیاست سے عوام کو یرغمال بنایا۔ انہوں وارث شاہ نے ڈسکہ پی ڈی ایم اسٹیج پر موجود شکلوں کیلئے کہا تھا کہ شکلوں سارے بندے لگدے وچوں بندا ٹاواں ٹاواں۔انہوں نے کہاکہ پنجاب کے اندر کھڑے ہوکر لسانیت کو ہوا دی۔ پنجاب کے غیور بہن بھائیوں کے درمیاں لسانیت سے زہر آلود کیا۔انہوں نے کہاکہ یہ کوئی نئی سازش نہیں ہے اس سے پہلے بھی یہ خاندان اس طرح کے ہتھکنڈے استعمال کرتا رہا ہے۔انہوں نے کہاکہ ظاہرے شاہ خاندان سے اپنا تعلق دکھایا تو محترمہ کا منشیات فروشوں اور قبضہ گروپوں سے تعلق داری کا آئینہ دار ہے۔ یہ الیکشن نہیں بلکہ کرپشن کے حامیوں اور کرپشن کےامخالفین کے درمیان ایک جنگ ہے۔ انہوں نے کہاکہ یہ نوٹ کو عزت دو کی آڑ میں ووٹ کو عزت دو کا نعرہ لگا رہے ہیں۔ عمران خان نے اوپن بیلٹنگ کی بات کی تو ان سیاسی مداریوں نے اس کی مخالفت کی۔ انہوں نے کہاکہ شاہی خاندان کا ماضی نوٹ کی سیاست سے جڑا ہے اور آپ کی نیت کا کھوٹ ہے کہ آپ کو اپنے سٹیج پر ہر سیاسی یتیم کو کھڑا کرنا پڑتا ہے۔انہوں نے کہاکہ مستقبل میں ان کی سیاسی موت ہے ۔ ان کے چہرے کی مایوسی بتا رہی تھی کی ن لیگ ایک سڑک تک سکڑ چکی ہے۔انہوں نے محترمہ کا چچا اس صوبے کا 12سو ارب کا مقروض کر کے گیا اور اپنی رنگ بازی کی خاطر سیالکوٹ : 35کروڑ روپے میٹرو ٹرین کا بل ا ور 24لاکھ آمدن سے اس کی ۔کرپشن اور کک بیک کیلئے اس صوبے کے عوام کو گروی رکھ کر انہوں کے قرضے کیلئے ایک بھائی ملک سے باہر چلا گیا اور دوسرا اندر چلا گیا۔انہوں نے کہاکہ خواجہ آصف پارٹی چھوڑے نہ چھوڑے ۔۔ عوام ن لیگ چھوڑ چکے ہیں ۔انہوں نے کہاکہ نواز شریف پاکستان چھوڑ چکے ہیں۔ عمران خان اس کرپٹ ٹولہ کیلئے ایک ڈراو¿نا خواب بن چکا ہے۔انہوں نے کہاکہ عمران خان ان کو یاد دلاتا رہے گا کہ وہ اس ملک میں آئین اور قانون کے محافظ ہیں۔منہ میں سونے کا چمچ لے کر پیدا ہونے والوں کو کیا پتہ انڈے کلو میں نہیں درجن میں بکتے ہیں۔ سیاسی بہروپہے عوام کو بے وقوف بنانے کیلئے ہر حد کو پار کرنا چاہتے ہیں اور ہمارے ورکرز کو اشتعال دلانا چاہتے ہیں۔ مداری گرعسکری اداروں کو متنازع بنا کر عوام کو مشتعل کرنا چاہتے ہیں اور لسانیت سے عوام کو آپس میں دستو گریبان کرنا چاہتے ہیں۔ انہوںنے کہاکہ ہماری جنگ ان کے خلاف ہے جنہوں نے اپنے ذاتی اکاو¿نٹ بھرنے کیلئے کرپشن کے منصوبے شروع کیے۔انہوں نے کہاکہ ن لیگ نے پسے ہوئے طبقے کو اپنے اقتدار کے لئے ڈھال بنایا۔انہوں نے عوام کی طاقت سے قبضہ گروپوں سے ڈسکہ کو آزاد کروائیں گے۔انہوں نے کہاکہ ڈسکہ کے عوام با شعور ہیں جنہوں نے پورے پنجاب سے اکٹھے کئے ہوئے ٹھگوں کا سیاسی جنازہ نکالا۔انہوں نے کہا کہ صفدر ایک طرف کھڑا تھا اس سے بھی اظہار ہمدردی کرنا چاہتی ہوں ، مریم عسکری اداروں پر تنقید کر کے اس کی غیرت کو للکارتی رہیں ۔انہوں نے کہاکہ ڈسکہ کے عوام کو کہنا چاہتی ہوں کے ایک طرف منشیات فروش اور پٹواریوں کے سہارے سیاست کو زندہ رکھنے والا ٹولہ اور دوسری طرف صاف شفاف قیادت اور پاکستان کو مشکل سے نکالنے کا عزم ہے۔ ڈسکہ کے رہنے والوں کے تمام حقوق ان کی دہلیز تک پہنچائیںگے ۔ 19فروری کا سورج پی ٹی آئی کی فتح کی امید لے کر آئے گا۔انہوںنے کہاکہ ن لیگ پیسے کے بل بوتے پر شناختی کارڈ خریدنے پر مصروف ہیں ۔ ہماری نظر ان کی تمام کارستانیوں پر ہے۔ انہوں نے کہاکہ عمران خان اس سسٹم سے عوام کا چھٹکارا دلانا چاہتا ہے۔ عمران خان نے سینیٹ الیکشن کیلئے اپنے کارکنان کو ٹکٹ دیکر ثابت کر دیا کہ کارکنان ہی اس پارٹی کا سرمایہ ہیں۔بے شرمی میں پی ایچ ڈی کرنے والے شرم حیا کی بات کر رہے تھے۔ آج پھر عسکری ادارو ں کا متنازع بنانے کی کوشش اور یہ ثابت کیا کہ ظل سبحانی کا پورا خاندا ن آمریت کے گملے سے اگا تھا اور عوام نے ان کا بیانیہ مسترد کر دیا ہے۔

LEAVE A RESPONSE

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

×