GW TV

Gujranwala Based News

گوجرانوالہ

گوجرانوالہ: ایس ایچ او تھانہ کھیالی اکرم شہباز گجر اور اے ایس آئی محمد طارق گجر کو معطل کیوں کیا گیا وجہ سامنے آگئی۔

گوجرانوالہ: ایس ایچ او تھانہ کھیالی اکرم شہباز گجر اور اے ایس آئی محمد طارق گجر کو معطل کیوں کیا گیا وجہ سامنے آگئی۔ HM نیوز ذرائع

گوجرانوالہ: مورخہ 16 مئی کو نسرین بی بی ذوجہ الطاف احمد سکنہ 30 فٹا بازار نے تھانہ کھیالی درخواست دی اور موقف اختیار کیا کہ ملزمان مسمیان محمد ارسلان پولیس کانسٹیبل ولد محمد یوسف سکنہ رندھیر نوشہرہ ورکاں، سعید ولد رحمت نائی سکنہ عالم چوک مع کس 4 دیگر افراد رات ایک بجے گھر کی چھت پر آئے اور چھت پر ہی ملزم ارسلان نے زنا بالجبر کی کوشش کی وغیرہ وغیرہ تھانہ کھیالی کی جانب سے درخواست پر وقتی طور پر مقدمہ درج نا کیا گیا جبکہ دو دن بعد مورخہ 18 مئی کو مقدمہ نمبر308/21 ذیر دفعات بجرم 376٫511٫452٫354 درج رجسٹرڈ کر لیا گیا، مختلف ذرائع سے غیر مصدقہ اطلاعات کے مطابق اس دوران ملزمان اور مدعی پارٹی کا پیسوں کے عوض مک مکا بھی ہو گیا اور صلح نامہ پیش کر دیا گیا اور اس کے بعد کھیالی پولیس کی جانب سے افسران بالی کے نوٹس میں دیے بغیر اور بلا کسی متعلقہ افسر کی اجازت کے سنگین دفعات کے تحت مذکورہ مقدمہ درج کر لیا گیا جو کہ ایک ایس ایچ او کے اختیارات سے بالاتر تھا اور دوسرا یہ کہ متعلقہ اے ایس آئی طارق گجر (کار خاص) نے ملزم ارسلان کانسٹیبل سے بذریعہ فون کال مقدمہ میں بے گناہ کرنے کیلیے بھاری رقم کا مطالبہ کیا جس کی ارسلان نے ریکارڈنگ کر لی، لہذا اس ساری صورت حال کا بغور جائزہ لینے کے بعد محترم سٹی پولیس آفیسر سرفراز احمد فلکی صاحب نے بھرپور نوٹس لیا اور ایس ایچ او کھیالی اکرم شہباز گجر اور اے ایس آئی طارق گجر کو کلوز ٹو لائن (معطل) کردیا،
نوٹ: ملزم ارسلان کانسٹیبل کریمنل ریکارڈ یافتہ، اور منشیات فروشوں سے پانچ لاکھ لینے کے جرم میں معطل ہوا تھا اور ابھی تک کلوز ٹو لائن ہے
کھیالی پولیس کی جانب سے مقدمہ درج کرنے میں تاخیر کرنا،
ملزم کو بے گناہ لکھنے کیلیے پیسوں یعنی رشوت کا مطالبہ کرنا،
اور افسران بالی کی اجازت کے بغیر سنگین دفعات کے زیرتحت مقدمہ درج کرنا یعنی اختیارات کا ناجائز استعمال کرنے کی بابت SHOاور ASI کو معطل کردیا گیا،

LEAVE A RESPONSE

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

×