GW TV

Gujranwala Based News

کامونکی

میڈیا میں جدید ٹیکنالوجی کے استعمال کے بعد صحافیوں کی ٹریننگ اور تربیت کے پروگرام ہونا چاہئیں حامد جاوید اعوان

گوجرانوالہ( حافظ عبدالرحمٰن منہاس سے) میڈیا میں جدید ٹیکنالوجی کے استعمال کے بعد صحافیوں کی ٹریننگ اور تربیت کے پروگرام ہونا چاہیئں۔پریس کلبوں کو صحافیوں کی تربیت گاہ و پناہ گاہوں کا کردار ادا کرنا چاہیے۔ان خیالات کا اظہار ڈائریکٹر پبلک ریلشنز گوجرانوالہ ڈویژن حامد جاوید اعوان کے اعزاز میں کامونکی الیکٹر انک میڈیا ایسوسی ایشن کے صدر عبدالناصرشیخ کی جانب سے دیئے گئے عشائیہ میں خطاب کرتے ہوئےکیا انفارمیشن آفیسر منور حسین بھی اس موقع پر انکے ہمراہ تھے،بعدازاں ڈائریکٹر پبلک ریلشنز گوجرانوالہ ڈویژن حامد جاوید اعوان نے پریس کلب میں صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ پریس کلبوں کو فعال کرنے اور صحافیوں کو درپیش مسائل کے حل کیلئے محکمہ ڈی پی آر ہمیشہ تیار ہے۔اس موقع پرکامونکی الیکٹرانک میڈیا ایسوسی ایشن کے صدر عبدالناصر شیخ نے پنجاب ماں بولی دیہاڑ کے مطابق پنجابی زبان میں اظہار خیال کرتے ہوئے کہا ہے کہ جس طرح ورکر صحافی عوامی و علاقائی مسائل اپنے قلم کے ذریعے منظر عام پر لاکر ان کی نشاندہی کرتا ہے اس کے بدلے اُسکا حق بنتا ہے کہ ادارے و دیگر افسیران صحافیوں کو عزت دیں۔جبکہ پریس کلب کے صدر تنویر احمد بٹ نے کہا کہ ڈائریکٹر پبلک ریلشنز گوجرانوالہ ڈویژن جاوید اعوان کی پریس کلب میں آمد پر اور معزز مہمانوں کا خیر مقدم کیا اور کہا کہ ورکر صحافی بلاشُبہ صحافت میں ریڑ ھ کی ہڈی کی حقیقت رکھتے ہیں اور ورکر صحافی اپنے ذاتی مسائل کو پس پشت ڈالتے ہوئے معاشرے میں ہونے والے جرائم و مسائل کو اُجاگر کرتے ہیں۔قلم کاروں اور تمام شعبہ ہائے صحافت سے وابسطہ افراد کسی بھی معاشرے کا حسن ہیں۔۔۔۔۔۔

LEAVE A RESPONSE

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

×